Sarwar E Ishq Ne Ulfat Se Bandh Rakha Hai

سرور عشق نے الفت سے باندھ رکھا ہے

سرور عشق نے الفت سے باندھ رکھا ہے

تری غرض نے محبت سے باندھ رکھا ہے

عجب کشش ہے ترے ہونے یا نہ ہونے میں

گماں نے مجھ کو حقیقت سے باندھ رکھا ہے

کبھی کبھی تو مجھے ٹوٹتا دکھائی دے

جو ایک عہد قیامت سے باندھ رکھا ہے

شہ جمال ترے شہر کے فقیروں کو

کمال ہجر نے وحشت سے باندھ رکھا ہے

بھٹک رہا ہوں میں غار طلسم کے اندر

کہ علم تو نے جہالت سے باندھ رکھا ہے

ارشد لطیف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(493) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Lateef, Sarwar E Ishq Ne Ulfat Se Bandh Rakha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Lateef.