Gum Shuda Khawab Shab Rafta Ke Roshan Mehtaab

گم شدہ خواب شب رفتہ کے روشن مہتاب

گم شدہ خواب شب رفتہ کے روشن مہتاب

آج کی رات سر بام اتر آئے ہیں

گم شدہ چہرے مرے ماضی کے زریں اوراق

ایک اک کر کے سر عام کھلے جاتے ہیں

مجھ سے کچھ کہتی ہیں خاموش نگاہیں ان کی

ان کی آنکھوں میں ابھی تک ہے وفا کی تنویر

ان کے ماتھے پہ ابھی تک ہے وہی تابانی

ان کے پیروں میں نہیں عمر رواں کی زنجیر

ان سے دنیا کو بدلنے کی قسم کھائی تھی

ان سے اب آنکھ ملاتے ہوئے شرم آتی ہے

ایاز محمود ایاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(631) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ayaz Mahmood Ayaz, Gum Shuda Khawab Shab Rafta Ke Roshan Mehtaab in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ayaz Mahmood Ayaz.