Zaroor Ghat Main Betha Hai Beqarar Koi

ضرور گھات میں بیٹھا ہے بے قرار کوئی

ضرور گھات میں بیٹھا ہے بے قرار کوئی

عدو نہیں تو یقیناً ہے میرا یار کوئی

مفید ہیں یہ غریبی کے دن بھی میرے لئے

کہ ہورہا ہے شب و روز آشکار کوئی

ہے میرے ہونٹ کے آگے جو دور تک صحرا

تو میری آنکھ کے پیچھے ہے آبشار کوئی

میں غم کی قید میں زندہ ہوں اس یقین کے ساتھ

خوشی کا ڈھونڈنے نکلے گا شہسوار کوئی

بھلا سکے گا کہاں یہ جہاں تجھے عزمی

کرے گا یاد کہ آیا تھا ایک بار کوئی

عزم الحسنین عزمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(773) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Azm Ul Hasnain Azmi, Zaroor Ghat Main Betha Hai Beqarar Koi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 8 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Azm Ul Hasnain Azmi.