Shaam E Bay Mehr MaiN Ik Yaad Ka Jugnu Chamka

شام بے مہر میں اک یاد کا جگنو چمکا

شام بے مہر میں اک یاد کا جگنو چمکا

اور پھر ایک ہی چہرہ تھا کہ ہر سو چمکا

اے چراغ نگۂ یار میں جاں سے گزرا

اب مجھے کیا جو پئے دل زدگاں تو چمکا

روز ملتے تھے تو بے رنگ تھا تیرا ملنا

دور رہنے سے ترے قرب کا جادو چمکا

دل میں پھر بجھنے لگا ضبط کا تارا کوئی

پھر مری نوک مژہ پر کوئی آنسو چمکا

تاج خسرو کی چمک ماند پڑی جاتی ہے

شہر کے کوچہ و بازار میں لوہو چمکا

کھو گیا ہے انہی تاریک خلاؤں میں کہیں

وہ بھی کیا چاند تھا جس سے مرا پہلو چمکا

میں نے جانا کہ فراستؔ کوئی غم خوار آیا

عکس مہتاب کچھ اس طرح لب جو چمکا

فراست رضوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1211) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Frasat Rizvi, Shaam E Bay Mehr MaiN Ik Yaad Ka Jugnu Chamka in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Frasat Rizvi.