Woh Bhi Srahne Lagey Arbab Fun Ke Baad

وہ بھی سراہنے لگے ارباب فن کے بعد

وہ بھی سراہنے لگے ارباب فن کے بعد

داد سخن ملی مجھے ترک سخن کے بعد

دیوانہ وار چاند سے آگے نکل گئے

ٹھہرا نہ دل کہیں بھی تری انجمن کے بعد

ہونٹوں کو سی کے دیکھیے پچھتائیے گا آپ

ہنگامے جاگ اٹھتے ہیں اکثر گھٹن کے بعد

غربت کی ٹھنڈی چھاؤں میں یاد آئی اس کی دھوپ

قدر وطن ہوئی ہمیں ترک وطن کے بعد

اعلان حق میں خطرۂ دار و رسن تو ہے

لیکن سوال یہ ہے کہ دار و رسن کے بعد

انساں کی خواہشوں کی کوئی انتہا نہیں

دو گز زمیں بھی چاہئے دو گز کفن کے بعد

کیفی اعظمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(621) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of KAIFI AZMI, Woh Bhi Srahne Lagey Arbab Fun Ke Baad in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of KAIFI AZMI.