مشہور شاعر مجید امجد کی نظم شاعری ۔ مجید امجد کی نظمیں

یاد

مجید امجد

کبھی کبھی تو زندگیاں

مجید امجد

ہر جانب ہیں

مجید امجد

ہر سال ان صبحوں

مجید امجد

تو پریم مندر کی پاک دیوی تو حسن کی مملکت کی رانی

مجید امجد

پھول کی خوشبو ہنستی آئی

مجید امجد

ایک اجلا سا کانپتا دھبا

مجید امجد

اپنے دل کی کھوج میں کھو گئے کیا کیا لوگ

مجید امجد

پنواڑی

مجید امجد

بیس برس سے کھڑے تھے جو اس گاتی نہر کے دوار

مجید امجد

سحر کے وقت دفتر کو رواں ہوں

مجید امجد

یہ دنیا یہ ربط سی ایک زنجیر

مجید امجد

گلوں کی شیج ہے کیا، مخملیں بچھونا کیا

مجید امجد

آہ کب تک گلہ شومئی تقدیر کریں

مجید امجد

میں نے اس کو دیکھا ہے

مجید امجد

ڈاک خانے کے ٹکٹ گھر پر خریداروں کی بھیڑ

مجید امجد

کنواں چل رہا ہے مگر کھیت سوکھے پڑے ہیں نہ فصلیں،نہ خرمن،نہ دانہ

مجید امجد

جو دن کبھی ہیں بیتا وہ دن کب آئے گا

مجید امجد

جنون عشق کی رسم عجیب کیا کہنا

مجید امجد

اس اپنی کرن کو آتی ہوئی صبحوں کے حوالے کرنا ہے

مجید امجد

بنگ پگڈنڈی سر کہسار بل کھاتی ہوئی

مجید امجد

دل سے ہر گزری بات گزری ہے

مجید امجد

خدایا اب کے یہ کیسی بہار آئی

مجید امجد

کاش میں تیرے بن گوش میں بندا ہوتا

مجید امجد

Records 1 To 24 (Total 29 Records)