Ik Vahm Ki Soorat Sir Deewar Yaqeen Hain

اک وہم کی صورت سر دیوار یقیں ہیں

اک وہم کی صورت سر دیوار یقیں ہیں

دیکھو تو ہیں موجود نہ دیکھو تو نہیں ہیں

ہم سے کشش موجۂ رفتار نہ پوچھو

ہم اہل محبت تو گرفتار زمیں ہیں

اس راہ سے ہٹ کر گزر اے ناقۂ لیلیٰ

اس گوشۂ صحرا میں ہم آرام گزیں ہیں

چھوڑیں بھی تو کس طرح ہم اس شہر کو چھوڑیں

اس نجد کے پابند ترے خاک نشیں ہیں

اس دائرۂ روشنی و رنگ سے آگے

کیا جانیے کس حال میں بستی کے مکیں ہیں

وہ تب بھی گریزاں تھے مگر دشمن دل تھے

وہ اب بھی گریزاں ہیں مگر دشمن دیں ہیں

ہر مرحلۂ بود تھا نابود کی منزل

لیکن ترے ہوتے ہمیں لگتا تھا ہمیں ہیں

کس طور سمیٹیں تری پلکوں کے ستارے

کہنے کو تو شاعر ہیں مگر اپنے تئیں ہیں

نجیب احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(417) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Najeeb Ahmed, Ik Vahm Ki Soorat Sir Deewar Yaqeen Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Najeeb Ahmed.