Phela Howa Hai Baagh Mein Har Simt Noor Subah

پھیلا ہوا ہے باغ میں ہر سمت نور صبح

پھیلا ہوا ہے باغ میں ہر سمت نور صبح

بلبل کے چہچہوں سے ہے ظاہر سرور صبح

بیٹھے ہو تم جو چہرہ سے الٹے نقاب کو

پھیلا ہوا ہے چار طرف شب کو نور صبح

بد قسمتوں کو گر ہو میسر شب وصال

سورج غروب ہوتے ہی ظاہر ہو نور صبح

پو پھٹتے ہی ریاض جہاں خلد بن گیا

غلمان مہر ساتھ لئے آئی حور صبح

مرغ سحر عدو نہ موذن کی کچھ خطا

پرویںؔ شب وصال میں سب ہے فتور صبح

پروین ام مشتاق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(418) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of PARVEEN UMM E MUSHTAQ, Phela Howa Hai Baagh Mein Har Simt Noor Subah in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 42 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of PARVEEN UMM E MUSHTAQ.