بند کریں
شاعری حافظ شیرازی

زاہدِ ظاہر پرست از ھالِ ما آگاہ نیست

-

zahid zahir parast azhal ma agah neest


(195) ووٹ وصول ہوئے