Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta, Urdu Ghazal By Professor Rasheed Hasrat

Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Professor Rasheed Hasrat. Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta comes under the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope category of Urdu Ghazal. You can read Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta on this page of UrduPoint.

میں تیرے سنگ ابھی اور چل نہِیں سکتا

پروفیسر رشید حسرت

میں تیرے سنگ ابھی اور چل نہِیں سکتا

لِکھا گیا جو مُقدّر میں ٹل نہِیں سکتا

ہر ایک گام پہ کانٹوں کا سامنا تو ہے

چُنا جو راستہ، رستہ بدل نہِیں سکتا

میں بُھوک جھیل کے فاقوں سے مر تو سکتا ہُوں

ٗملیں جو بِھیک میں ٹُکڑوں پہ پل نہِیں سکتا

قسم جو کھائی تو مر کر بھی لاج رکھ لُوں گا

کہ راز دوست کا اپنے اُگل نہِیں سکتا

بھلے ہو جِسم پہ پوشاک خستہ حال مگر

لِباس تن پہ محبّت کا گل نہِیں سکتا

زمِیں پہ فصل سروں کی اُگانے چل تو دِیئے

مگر یہ پودا کبھی پُھول پھل نہِیں سکتا

رکھی خُدا نے کوئی سِل سی میرے سِینے میں

سو اِس میں پیار کا جذبہ مچل نہِیں سکتا

وہ اور لوگ تھے روشن ہیں تُربتیں جِن کی

دِیا مزار پہ میرے تو جل نہِیں سکتا

رشِید صدمے کئی ہنس کے جھیل سکتا ہوں

کِسی کلی کا مگر دِل مسل نہِیں سکتا

پروفیسر رشید حسرت

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2615) ووٹ وصول ہوئے

You can read Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta written by Professor Rasheed Hasrat at UrduPoint. Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta is one of the masterpieces written by Professor Rasheed Hasrat. You can also find the complete poetry collection of Professor Rasheed Hasrat by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Professor Rasheed Hasrat' above.

Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta is a widely read Urdu Ghazal. If you like Mein Tere Sang Abhi Aur Chal Nahi Sakta, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.