Badal Ki Titli Jaise Hai

بادل کی تتلی جیسی ہے

بادل کی تتلی جیسی ہے

دھندلی وادی میں رہتی ہے

اس کی آنکھیں جگنو جگنو

حیرت سے دنیا تکتی ہے

نیلم جھیل کے دامن میں شب

چاند پہن کر سو جاتی ہے

اس کی حیا کے رنگ جدا ہیں

پانی میں پانی لگتی ہے

زخمی گھروں کے ادھڑے منظر

بڑھیا بستی دیکھ رہی ہے

صحرا ہاتھ میں تیز ہوا نے

ریکھا جیون کی کھینچی ہے

بادل کپڑے جب پہنے وہ

بارش آنکھوں میں گرتی ہے

وہ دکھیارن پریم پجارن

کب سے مندر میں بیٹھی ہے

پتھریلے رنگیں پھولوں میں

شیشے کی بے رنگ کلی ہے

قندیل بدر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(439) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Qandeel Badar, Badal Ki Titli Jaise Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Qandeel Badar.