Lahoo Mein Nachti Hameshgi Udas Ho Ke Reh Gayi

لہو میں ناچتی ہمیشگی اداس ہو کے رہ گئی

لہو میں ناچتی ہمیشگی اداس ہو کے رہ گئی

نہال کرنے والی نرم جھیل پیاس ہو کے رہ گئی

وہ لذتوں بھری محبتوں بھری ملن کی ایک شب

کبھی نہ پوری ہونے والی کوئی آس ہو کے رہ گئی

سمجھ رہا تھا میں جسے سہاگ رات کی وشال رت

مرے قریب آتے آتے وہ قیاس ہو کے رہ گئی

ہرے لباس میں لگی بھلی وہ ایک دودھیا کلی

نہ جانے کس طرف چلی کہ خشک گھاس ہو کے رہ گئی

اچھالنا جو چاہتا تھا میں عوام کے لیے ظفرؔ

مرے خیال کی وہ لہر حرف خاص ہو کے رہ گئی

صابر ظفر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(416) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sabir Zafar, Lahoo Mein Nachti Hameshgi Udas Ho Ke Reh Gayi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 123 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sabir Zafar.