Sajid Mahmood Rana Poetry, Sajid Mahmood Rana Shayari

ساجد محمود رانا - Sajid Mahmood Rana

1976 کوئٹہ

Social Poetry of Sajid Mahmood Rana - Social Shayari

ساجد محمود رانا کی معاشرتی شاعری

یاد آئے گی آپ کی کب تک

Yaad Aey Gi Aap Ki Kab Tak

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

ایک مدت سے مرے لب پہ شکایت کیا ہے

Aik Muddat Se Meray Dil Pe Shikayat Kia Hae

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

جانتا ہوں کہ ترا حسن سنور جائے گا

Janta Hun Keh Tera Husn Sanwar Jaey Ga

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

ٹوٹنے والے خواب کی پرسہ داری تھی

Tootnay Walay Khwaab Ki Pursa Daari Thi

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

عجیب لوگ ہیں کیسے قرار دیتے ہیں

Ajeeb Log Hain Kaesay Qarar Detay Hain

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

آستیں مار تو نہیں ہوتا

Asteen Maar Tu Nahin Hota

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

وحشتوں کے لباس کا رونا

Wahshaton Kay Libas Ka Rona

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

بوجھ اپنے بدن کا بھی اٹھایا نہیں جاتا

Bojh Apnay Badan Ka Bhi Othaya Nahin Jata

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

خوشبو ہے کوئی اور چمن، پھول کوئی اور

Khushboo Hae Koi Aor Chaman Phool Koi Aor

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

کب تلک بوجھ یہ وحشت کا سہارا جائے

Kab Talak Bojh Yeh Wehshat Ka Sahara Jaey

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

خستہ دیوار کا سہارا تھا

Khasta Deewar Ka Sahara Tha

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

اب تو حیواں سے نہ شیطان سے خوف آتا ہے

Ab Tu Haewan Se Na Shaetan Se Khaof Aata Hae

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

یہ کم نہیں ہے کہ شہرِ عذاب سے نکلا

Yeh Kam Nahin Hae Keh Shehr E Azab Se Nikla

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

گلہ کیا نہ ہی مرہم کا انتظار کیا

Gila Kia Na Hi Marham Ka Intezar Kia

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

پیڑ گرتا سنبھل گیا تو کیا

Paer Girta Sanbhal Gaya Tu Kia

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

دشتِ غربت کی کمائی نے بہت رنج دیا

Dasht E Ghurbat Ki Kamai Ne Bahut Ranj Diya

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

کوئی اللہ کوئی بھگوان ہوا پھرتا ہے

Koi Allah Koi Bhagwan Hoa Phirta Hae

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

صبحِ روشن کا جو مدت سے نشاں ڈھونڈتے ہیں

Subh E Raoshan Ka Jo Moddat Se Nishan Dhondtay Hain

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

وحشتوں کے جہاں میں رہتا ہوں

Wahshaton Kay Jahan Mein Rehta Hun

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

حسرتِ دل کو مار کر دیکھا

Hasrat E Dil Ko Maar Kar Dekha

(Sajid Mahmood Rana) ساجد محمود رانا

Social Shayari of Sajid Mahmood Rana - Poetry of Social. Read the best collection of Social poetry by Sajid Mahmood Rana, Read the famous Social poetry, and Social Shayari by the poet. Social Nazam and Social Ghazals of the poet. The best collection of Shayari by Sajid Mahmood Rana online. You can also read different types of poetries by the poet including Social Shayari from different books of the poet.