Samina Saqib Poetry, Samina Saqib Shayari

ثمینہ ثاقب - Samina Saqib

1992 خان پور

Poetry of Samina Saqib, Urdu Shayari of Samina Saqib

ثمینہ ثاقب کی شاعری

کیسا پیارا شخص تھا اور میں خواب میں رکھ کر بھول گئی

Kaisa Payara Shakhs Tha Aur Main Khawab Mein Rakh Kar Bhol Gai

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

بدن کے کھیت کو اب سینچنا ہے

Badan Ke Khait Ko Ab Seenchna Hai

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

جستجو سے خدا ملا کہ نہیں

Justaju Se Khuda Mila Ke Nahi

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

بدن یہ جس کے لیے گہرا گھنا سایا ہے

Badan Ye Jis Kel Iye Gehra Ghana Saya Hai

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

آئے گا کب میرا شہزادہ توبہ ہے

Aye Ga Kab Mera Shehzada Toba Hai

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

میں اپنے غم چھپانا چاہتی ہوں

Main Apne Gham Chupana Chahti Hoon

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

لگنے کو تو ابھی کے پھول کی ہے

Lagne Ko To Abhi Ke Phool Ki Hai

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

پیڑ تعبیر کے ہرے ہوتے

Ped Tabeer Ke Hare Hote

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

عشق کو قید سے رہا کر لیں

Ishq Ko Qaid Se Riha Karlen

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

کھو گئے سارے راستے مائے

Kho Gaye Sare Raste Maye

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

مجھے کہانی کے کردار سے محبت تھی

Mujhe Kahani Ke Kardar Se Mohabbat Thi

(Samina Saqib) ثمینہ ثاقب

Urdu Poetry & Shayari of Samina Saqib. Read Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry, Heart Broken Poetry of Samina Saqib, Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry, Heart Broken Poetry and much more. There are total 11 Urdu Poetry collection of Samina Saqib published online.