Jab Sham Hui Mein Ne Qadam Ghar Se Nikala

جب شام ہوئی میں نے قدم گھر سے نکالا

ب شام ہوئی میں نے قدم گھر سے نکالا

ڈوبا ہوا خورشید سمندر سے نکالا

ہر چند کہ اس رہ میں تہی دست رہے ہم

سودائے محبت نہ مگر سر سے نکالا

جب چاند نمودار ہوا دور افق پر

ہم نے بھی پری زاد کو پتھر سے نکالا

دہکا تھا چمن اور دم صبح کسی نے

اک اور ہی مفہوم گل تر سے نکالا

اس مرد شفق فام نے اک اسم پڑھا اور

شہزادی کو دیوار کے اندر سے نکالا

ثروت حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1320) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sarwat Hussain, Jab Sham Hui Mein Ne Qadam Ghar Se Nikala in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 56 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sarwat Hussain.