Dhoop Apni Ungliyaan Chatkha Rahi Hai

دھوپ اپنی اُنگلیاں چٹخا رہی ہے

سردیاں

پارک کے کونے میں رکھے

بنچ پر ٹانگیں پسارے

اونگھتی ہیں

اوڑھنی گہرے گلابی رنگ میں لپٹی

ہنسی کو آنکھ میں بھر کر

پھسلتی جا رہی ہے

دل ، تمہاری یاد سے خالی

قریباً ہو چکا ہے

پھر بھی کوئی بات ہے جو

دل کی شریانوں سے چمٹی جا رہی ہے

یاد ہے ، یا بات ہے،یا بے سبب سا وسوسہ ہے

کوئی سلسلہ ہے

اور ۔۔۔سردیاں ۔۔۔!

شبہ طراز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(790) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sheba Taraz, Dhoop Apni Ungliyaan Chatkha Rahi Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Urdu Poetry. Also there are 161 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sheba Taraz.