Megha Rut Ki Raat Khamoshi

میگها رت کی رات، خموشی

میگها رت کی رات، خموشی

میں، دلبر، جذبات، خموشی

بن سجنا او چرخے والی

شام سویرے کات خموشی

غم کا آہو چیخ رہا ہو

ایسے میں سوغات خموشی

جتنے بھی بہتان لگا لے

مجھ برہن کی ذات خموشی

چپ رہنا ولیوں کا شیوہ

سب سے اچھی بات خموشی

میں ایسا گلشن ہوں جس میں

ہر غنچہ ہر پات خموشی

ڈاکٹر اسد علی شاہ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(453) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Doctor Asad Ali Shah, Megha Rut Ki Raat Khamoshi in Urdu. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Doctor Asad Ali Shah.