Agar Woh Marhala Aaye

اگر وہ مرحلہ آئے

اگر وہ مرحلہ آئے

ہوا جب سانس لینا بھول جائے

مسافر چلتے چلتے رک پڑے سوچے

مجھے اب کون سی منزل کو جانا ہے

پرندہ آسماں پر

دائرہ در دائرہ اڑتا

سفیدی کے مہا گرداب کے اندر اتر جائے

مندی آنکھوں میں جب

خوابوں کا اک موج ساگر

ریت کی شکنوں میں ڈھل کر

ریت ہو جائے

اگر وہ مرحلہ آئے

تو تم اپنی نظر کی سیدھ میں تکتے چلے جانا

فقط تکتے چلے جانا

اسی مانجھے کی پیلی ڈور کی جانب

جو اپنی ابتدا اور انتہا کے

درمیاں

اک آخری امکان بن کر رہ گئی ہے

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(360) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Agar Woh Marhala Aaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.