Badal Chatay To Raat Ka Har Zakham Wa Howa

بادل چھٹے تو رات کا ہر زخم وا ہوا

بادل چھٹے تو رات کا ہر زخم وا ہوا

آنسو رکے تو آنکھ میں محشر بپا ہوا

سوکھی زمیں پہ بکھری ہوئی چند پتیاں

کچھ تو بتا نگار چمن تجھ کو کیا ہوا

ایسے بڑھے کہ منزلیں رستے میں بچھ گئیں

ایسے گئے کہ پھر نہ کبھی لوٹنا ہوا

اے جستجو کہاں گئے وہ حوصلے ترے

کس دشت میں خراب ترا قافلہ ہوا

پہنچے پس خیال تو دیکھا کہ ریت پر

خیمہ تھا ایک پھول کی صورت کھلا ہوا

آئی شب سیہ تو دئیے جھلملا اٹھے

تھا روشنی میں شہر ہمارا بجھا ہوا

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1127) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Badal Chatay To Raat Ka Har Zakham Wa Howa in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.