Keeray Pairon Ke Jungle Main

کیڑے پیڑوں کے جنگل میں

کیڑے پیڑوں کے جنگل میں

پتوں کی کالی دیواریں

دیواروں میں لاکھوں روزن

روزن آنکھیں ہیں جنگل کی

وحشی آنکھیں ہیں جنگل کی

تو راہی انجان مسافر

جنگل کا آغاز نہ آخر

سب رستے ناپید ہیں اس کے

سب راہیں مسدود سراسر

تو راہی جگنو سا پیکر

ہار چکا جنگل سے لڑ کر

اب آنسو کا دیا جلائے

تو گم کردہ راہ مسافر

ایسی پاگل نظروں سے کیوں

اوج فلک کی پیشانی پر

جھلمل کرتے اس جھومر کو

گھور رہا ہے

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(638) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Keeray Pairon Ke Jungle Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.