Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi

چھوڑ کر دل میں گئی وحشی ہوا کچھ بھی نہیں

چھوڑ کر دل میں گئی وحشی ہوا کچھ بھی نہیں

کس قدر گنجان جنگل تھا رہا کچھ بھی نہیں

خاک پائے یاد تک گیلی ہوا نے چاٹ لی

عشق کی غرقاب بستی میں بچا کچھ بھی نہیں

حال کے زنداں سے باہر کچھ نہیں جز رود مرگ

اور اس زنداں میں جز زنجیر پا کچھ بھی نہیں

ہجر کے کالے سمندر کا نہیں ساحل کوئی

موجۂ طوفان دہشت سے ورا کچھ بھی نہیں

آبنائے درد کے دونوں طرف ہے دشت خوف

اب تو چارہ جان دینے کے سوا کچھ بھی نہیں

ہاتھ میرا اے مری پرچھائیں تو ہی تھام لے

ایک مدت سے مجھے تو سوجھتا کچھ بھی نہیں

شہر شب میں کون سا گھر تھا نہ دی جس پر صدا

نیند کے اندھے مسافر کو ملا کچھ بھی نہیں

رات بھر اک چاپ سی پھرتی رہی چاروں طرف

جان لیوا خوف تھا لیکن ہوا کچھ بھی نہیں

کاسۂ جاں ہاتھ میں لے کر گئے تھے ہم وہاں

لائے اس در سے بجز خون صدا کچھ بھی نہیں

عمر بھر عمر گریزاں سے نہ میری بن سکی

جو کرے کرتی رہے میں پوچھتا کچھ بھی نہیں

وہ بھی شاید رو پڑے ویران کاغذ دیکھ کر

میں نے اس کو آخری خط میں لکھا کچھ بھی نہیں

دولت تنہائی بھی آنے سے تیرے چھن گئی

اب تو میرے پاس اے جان وفا کچھ بھی نہیں

دل پہ لاکھوں لفظ کندہ کر گئی اس کی نظر

اور کہنے کو ابھی اس نے کہا کچھ بھی نہیں

ظہور نظر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(637) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi by Zahoor Nazar - Read Zahoor Nazar's best Shayari Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi at UrduPoint. Here you can read the best poetry Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi of Zahoor Nazar. Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi is the most famous poetry by Zahoor Nazar. People love to read poetry by Zahoor Nazar, and Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi by Zahoor Nazar is best among the whole collection of poetry by Zahoor Nazar.

Zahoor Nazar is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Zahoor Nazar. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Zahoor Nazar. On this page, you can read Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi by Zahoor Nazar. Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi is the best poetry by Zahoor Nazar.

Read the Zahoor Nazar's best poetry Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Zahoor Nazar's best Shayari, Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi of Zahoor Nazar will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Zahoor Nazar, regard it as the best poetry Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi of Zahoor Nazar.

We recommend you read the most famous poetry, Chor Kar Dil Main Gayi Wehshi Hawa Kuch Bhi Nahi of Zahoor Nazar here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.