بند کریں
شاعری عطا شاددشت میں سفر ٹھہرا پھر مرے سفینے کا

(214) ووٹ وصول ہوئے