بند کریں
شاعری پروین شاکرموجیں بہم ہوئیں تو کنارہ نہیں رہا

(225) ووٹ وصول ہوئے