Gilah Fazool Tha Ahad Wafa Kay Hotay Howay

گلہ فضول تھا عہد وفا کے ہوتے ہوئے

گلہ فضول تھا عہد وفا کے ہوتے ہوئے

سو چپ رہا ستم ناروا کے ہوتے ہوئے

یہ قربتوں میں عجب فاصلے پڑے کہ مجھے

ہے آشنا کی طلب آشنا کے ہوتے ہوئے

وہ حیلہ گر ہیں جو مجبوریاں شمار کریں

چراغ ہم نے جلائے ہوا کے ہوتے ہوئے

نہ چاہنے پہ بھی تجھ کو خدا سے مانگ لیا

یہ حال ہے دل بے مدعا کے ہوتے ہوئے

نہ کر کسی پہ بھروسہ کہ کشتیاں ڈوبیں

خدا کے ہوتے ہوئے ناخدا کے ہوتے ہوئے

مگر یہ اہل ریا کس قدر برہنہ ہیں

گلیم و دلق و عبا و قبا کے ہوتے ہوئے

کسے خبر ہے کہ کاسہ بدست پھرتے ہیں

بہت سے لوگ سروں پر ہما کے ہوتے ہوئے

فرازؔ ایسے بھی لمحے کبھی کبھی آئے

کہ دل گرفتہ رہے دل ربا کے ہوتے ہوئے

احمد فراز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(3080) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Faraz, Gilah Fazool Tha Ahad Wafa Kay Hotay Howay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 154 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Faraz.