Social Poetry of Ahmed Faraz - Social Shayari

احمد فراز کی معاشرتی شاعری

کس بوجھ سے جسم ٹوٹتا ہے

Kis Boojh Se Jism Toot-ta Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

دوستی کا ہاتھ

Dosti Ka Haath

(Ahmed Faraz) احمد فراز

تو بہتر ہے یہی

To Behtar Hai Yahi

(Ahmed Faraz) احمد فراز

کب سے سنسان خرابوں میں پڑا تھا یہ جہاں

Kab Se Sunsan Kharabon Main Para Tha Yeh Jahan

(Ahmed Faraz) احمد فراز

درد کی آگ بجھا دو کہ ابھی وقت نہیں

Dard Ki Aag Bujha Do Ke Abhi Waqt Nahi

(Ahmed Faraz) احمد فراز

بھلی سی ایک شکل تھی

Bhali Si Aik Shakal Thi

(Ahmed Faraz) احمد فراز

اے میرے وطن کے خوش نواؤ

Aey Mare Watan Ke Khush Nawa

(Ahmed Faraz) احمد فراز

اے میرے سارے لوگو

Aey Mare Saray Logo

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہم تو خوش تھے کہ چلو دل کا جنوں کچھ کم ہے

Hum To Khosh Thay Ke Chalo Dil Ka Juno Kuch Kam Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہر ایک بات نہ کیوں زہر سی ہماری لگے

Har Aik Baat Nah Ku Zaher Si Hamari Lagey

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہم تو خوش تھے کہ چلو دل کا جنوں کچھ کم ہے

Hum To Khosh Thay Ke Chalo Dil Ka Juno Kuch Kam Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہر ایک بات نہ کیوں زہر سی ہماری لگے

Har Aik Baat Nah Ku Zaher Si Hamari Lagey

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہم تو خوش تھے کہ چلو دل کا جنوں کچھ کم ہے

Hum To Khosh Thay Ke Chalo Dil Ka Juno Kuch Kam Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ہر ایک بات نہ کیوں زہر سی ہماری لگے

Har Aik Baat Nah Ku Zaher Si Hamari Lagey

(Ahmed Faraz) احمد فراز

نہ دل سے آہ نہ لب سے صدا نکلتی ہے

Nah Dil Se Aah Nah Lab Se Sada Nikalti Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

مثال دست زلیخا تپاک چاہتا ہے

Misal Dast Zulekha Tapaak Chahta Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

گماں یہی ہے کہ دل خود ادھر کو جاتا ہے

Guma Yahi Hai Kay Dil Khod Idhar Ko Jata Hai

(Ahmed Faraz) احمد فراز

کشیدہ سر سے توقع عبث جھکاؤ کی تھی

Kasheda Sir Say Tawaqa Abs Jhakao Ki Thi

(Ahmed Faraz) احمد فراز

کروں نہ یاد مگر کس طرح بھلاؤں اسے

Karoon Nah Yaad Magar Kis Terhan Bhulaoon Osay

(Ahmed Faraz) احمد فراز

غنیم سے بھی عداوت میں حد نہیں مانگی

Ghanim Say Bhi Adawat Main Had Nahi Mangi

(Ahmed Faraz) احمد فراز

سامنے اس کے کبھی اس کی ستائش نہیں کی

Samnay Is Ke Kabhi Is Ki Sataish Nahi Ki

(Ahmed Faraz) احمد فراز

زندگی سے یہی گلہ ہے مجھے

Zindagi Se Yahi Gilah Hai Mujhe

(Ahmed Faraz) احمد فراز

بیٹھے تھے لوگ پہلو بہ پہلو پیے ہوئے

Baithy Thay Log Pehlu Bah Pehlu Piyay Hue

(Ahmed Faraz) احمد فراز

ایسا ہے کہ سب خواب مسلسل نہیں ہوتے

Aisa Hai Ke Sab Khawaab Musalsal Nahi Hotay

(Ahmed Faraz) احمد فراز

Records 1 To 24 (Total 121 Records)

Social Shayari of Ahmed Faraz - Poetry of Social. Read the best collection of Social poetry by Ahmed Faraz, Read the famous Social poetry, and Social Shayari by the poet. Social Nazam and Social Ghazals of the poet. The best collection of Shayari by Ahmed Faraz online. You can also read different types of poetries by the poet including Social Shayari from different books of the poet.