Shehar Howa Main Jaltay Rehna Andeshon Ki Chokhat Par ( Radeef. . Noon )

شہر ہوا میں جلتے رہنا اندیشوں کی چوکھٹ پر (ردیف .. ن)

شہر ہوا میں جلتے رہنا اندیشوں کی چوکھٹ پر

رات گئے تک الجھے رہنا بے مفہوم خیالوں میں

قصر عمر گواہی دے گا کیسے کیسے کرب سہے

کیسی کیسی رت گزری ہے ہم پر اتنے سالوں میں

دوش خلا سے خاک زمیں پر اترے تو احساس ہوا

تارے بانٹنے والے راہی پڑ گئے کن جنجالوں میں

لے آئی کس قریۂ شب میں اک جھوٹے مہتاب کی چاہ

سایہ سایہ بھٹک رہا ہوں بے تنویر اجالوں میں

موسم موسم یہی رہا گر خوشبو کی تحقیر کا رنگ

سیسے کی کلیاں پھوٹیں گی اب لوہے کی ڈالوں میں

ساجدؔ اب تک بھگت رہے ہیں اک بے انت سزا کی عمر

اپنا نام لکھا بیٹھے تھے اک دن جینے والوں میں

اعتبار ساجد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(754) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aitbar Sajid, Shehar Howa Main Jaltay Rehna Andeshon Ki Chokhat Par ( Radeef. . Noon ) in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 114 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aitbar Sajid.