Baja Ke Hai Paas Hashar Hum Ko Karain Ge Paas Shabab Pehlay

بجا کہ ہے پاس حشر ہم کو کریں گے پاس شباب پہلے

بجا کہ ہے پاس حشر ہم کو کریں گے پاس شباب پہلے

حساب ہوتا رہے گا یا رب ہمیں منگا دے شراب پہلے

فضائے شب ہنس کے جگمگائی وہ نازنیں صبح بن کے آئی

ہوا ہے روشن مرے شبستاں میں چاند سے آفتاب پہلے

زباں پہ آیا نہ حرف مطلب کہ کہہ گئیں کچھ شریر نظریں

سوال کرنے نہ پائے ہیں ہم کہ مل گیا ہے جواب پہلے

جناں میں پہلے پہل پیے گا تو لڑکھڑاتا پھرے گا زاہد

سرور کوثر کی ہے اگر دھن جہاں میں پی لے شراب پہلے

ہے خسرو عشق کا یہ فرماں کہ دل لگانا نہیں ہے آساں

جسے ہو کوئے بتاں کا ارماں وہ کو بہ کو ہو خراب پہلے

غم و الم رنج و یاس و حسرت اٹھاؤں گا سب کے رخ سے پردے

تمہیں قسم ہے دل حزیں کی اٹھاؤ تو تم نقاب پہلے

الٰہی وہ بوئے پیرہن سے بھی پہلے ہو ہمکنار آ کر

چمن میں ہوتا ہے جلوہ افروز پھول سے ماہتاب پہلے

یہ کس کے رنگ رخ بہاریں نے بخش دی ہے طراوت نو

شگفتہ ہوتا نہ تھا گلستاں میں اس ادا سے گلاب پہلے

نگاہ ساقی کی مسکرائی کہا جب اخترؔ نے اپنی دھن میں

پئیں گے پیتے رہیں گے میکش مگر یہ خانہ خراب پہلے

اختر شیرانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1025) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Sheerani, Baja Ke Hai Paas Hashar Hum Ko Karain Ge Paas Shabab Pehlay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Sheerani.