Tabiyat Ko Tumhari Kya Howa Hai

طبعیت کو تمہاری کیا ہوا ہے

طبعیت کو تمہاری کیا ہوا ہے

مجھے بتلاؤ آخر کیا ہوا ہے

علاج مرض خود ہی مرض ٹھہرا

میں آخر کیا کہوں کہ کیا ہوا ہے

کلام زیست کا یہ شعر آخر

بھلا کس بحر میں لکھا ہوا ہے

پریشانی کا باعث بس وہی ہے

کہ جس ہاتف نے دل رکھا ہوا ہے

اسے میں کس زباں سے کیا کہوں جو

دل بے چین کو پرکھا ہوا ہے

کہانی یوں الجھتی جارہی ہے

کہ ہر کردار ہی الجھا ہوا ہے

ڈاکٹر ظفر اقبال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(612) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Doctor Zafar Iqbal, Tabiyat Ko Tumhari Kya Howa Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 3 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Doctor Zafar Iqbal.