Husn E ButaN Ka Ishq Meri Jaan Ho Gaya

حسن بتاں کا عشق مری جان ہو گیا

حسن بتاں کا عشق میری جان ہو گیا

یہ کفر اب تو حاصل‌ ایمان ہو گیا

اے ضبط‌ دل یہ کیسی قیامت گزر گئی

دیوانگی میں چاک گریبان ہو گیا

وہ بن سنور کے پھر مری محفل میں آ گئے

بیٹھے بٹھائے حشر کا سامان ہو گیا

کر کے سنگھار آئے وہ ایسی ادا کے ساتھ

آئینہ ان کو دیکھ کر حیران ہو گیا

دیکھا جو اس صنم کو تو محسوس یہ ہوا

جلوہ خدا کا صورت انسان ہو گیا

سب میرا عشق دیکھ کے لیتے ہیں تیرا نام

میں بھی ترے جمال کی پہچان ہو گیا

پوجا کریں گے اس کی فناؔ ہم تمام عمر

وہ بت ہمارے واسطے بھگوان ہو گیا

فنا بلند شہری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(917) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fana Bulandshehri, Husn E ButaN Ka Ishq Meri Jaan Ho Gaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fana Bulandshehri.