Bahut Dhoka Kia Khud Ko Magar Kia Kar Lia MaiN Ne

بہت دھوکا کیا خود کو مگر کیا کر لیا میں نے

بہت دھوکا کیا خود کو مگر کیا کر لیا میں نے

تماشا مجھ کو کرنا تھا تماشا کر لیا میں نے

یہاں بھی اب نئی آبادیوں کا شور سنتا ہوں

یہاں سے بھی نکلنے کا ارادہ کر لیا میں نے

سفر میں دھوپ کی شدت کہاں تک جھیلتا آخر

تری یادوں کو اوڑھا اور سایہ کر لیا میں نے

کوئی اچھا نہیں سب لوگ اک جیسے ہیں بستی میں

نتیجہ یہ ہوا خود کو اکیلا کر لیا میں نے

کوئی موسم ہو کیسی ہی فضا ہو غم نہیں ہوتا

زمانے والا ہر اک رنگ پیدا کر لیا میں نے

یہ دنیا اپنے ڈھب کی تھی نہ دنیا والے اچھے تھے

مگر کیا کیجیئے پھر بھی گزارہ کر لیا میں نے

فاروق شفق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(555) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farooq Shafaq, Bahut Dhoka Kia Khud Ko Magar Kia Kar Lia MaiN Ne in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farooq Shafaq.