Ayaz Chup Hae

ایاز چپ ہے

ایاز چپ ہے

صدائے محمود حرب تازہ کی تیز تر رو میں

بہہ گئی ہے

ایاز چپ ہے

ایاز چپ ہے کہ اب اسیران شب بھی

خوابیدہ عکس لے کر

تھکی تھکی خواہشوں کے سینوں پہ سو گئے ہیں

وہ دن کہ جس دن

جلے ہوئے طاقچوں پہ حرفوں کی بے کفن لاش

دفن ہوگی

وہ دن کلینڈر کی سبز تہ سے سرک گیا ہے

ایاز چپ ہے

لٹی ہوئی بستیوں میں تاریخ کا پڑاؤ

صفوں میں ترتیب ڈھونڈھتا ہے

لہو کی حدت میں منقسم صبح کم نصبیاں کا گرم سورج

ہزار ہا گرہیں کھولتا ہے

تو شہر کہسار کے جلو میں قدیم شاہراہ پوچھتی ہے

ایاز چپ ہے کہ بولتا ہے

ایاز چپ ہے

صدائے محمود حرب تازہ کی تیز تر رو میں بہہ گئی ہے

فرخ یار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1900) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farrukh Yar, Ayaz Chup Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farrukh Yar.