Ishq Jheela Hae Tu Chehra Zard Hona Chahiay

عشق جھیلا ہے تو چہرہ زرد ہونا چاہئے

عشق جھیلا ہے تو چہرہ زرد ہونا چاہئے

حسن کے شیدائیوں کو مرد ہونا چاہئے

بد گمانی پونچھ کر آنچل سے کوئی چوم لے

اس لئے تصویر پر کچھ گرد ہونا چاہئے

سچ کہو تو ہر کہانی داستان اپنی ہی ہے

آدمی کے دل میں تھوڑا درد ہونا چاہئے

آج کے بوسوں میں سچائی کی سرخی ہے کہاں

اے مصور ان لبوں کو زرد ہونا چاہئے

اس مکاں میں رہنے والے مردہ دل انسان ہیں

اس محل کے پتھروں کو سرد ہونا چاہئے

ایک جیسے چہرے مہرے ایک جیسی نیتیں

بھیڑ میں سب سے الگ اک فرد ہونا چاہئے

ماں کا آنچل تھام کر رونا بہت آسان ہے

دور رہ کر رونے والا مرد ہونا چاہئے

ف س اعجاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(550) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fay Seen Ejaz, Ishq Jheela Hae Tu Chehra Zard Hona Chahiay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fay Seen Ejaz.