Ishhq Ne Husan Ki Beddad Pay Rona Chaha

عشق نے حسن کی بیداد پہ رونا چاہا

عشق نے حسن کی بیداد پہ رونا چاہا

تخم احساس وفا سنگ میں بونا چاہا

آنے والے کسی طوفان کا رونا رو کر

نا خدا نے مجھے ساحل پہ ڈبونا چاہا

سنگ دل کیوں نہ کہیں بت کدے والے مجھ کو

میں نے پتھر کا پرستار نہ ہونا چاہا

حضرت شیخ نہ سمجھے مرے دل کی قیمت

لے کے تسبیح کے رشتے میں پرونا چاہا

کوئی مذکور نہ تھا غیر کا لیکن تم نے

باتوں باتوں میں یہ نشتر بھی چبھونا چاہا

دیدۂ تر سے بھی سرزد ہوا اک جرم عظیم

حشر میں نامۂ اعمال کو دھونا چاہا

مرتے مرتے بھی توقع رہی دل داری کی

رکھ کے سر زانوئے تقدیر پہ سونا چاہا

ہائے کس درد سے کی ضبط کی تلقین مجھے

ہنس پڑے دوست جو میں نے کبھی رونا چاہا

جنس شہرت بہت ارزاں تھی مگر میں نے حفیظؔ

دولت درد کو بے کار نہ کھونا چاہا

حفیظ جالندھری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(727) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hafeez Jalandhari, Ishhq Ne Husan Ki Beddad Pay Rona Chaha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 104 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hafeez Jalandhari.