Kaise Kaise Khawab Saje Hain Dekho Tu

کیسے کیسے خواب سجے ہیں دیکھو تو

کیسے کیسے خواب سجے ہیں دیکھو تو

آنکھوں میں کچھ رنگ نئے ہیں دیکھو تو

دھنک کنج سے آنے والے رنگ سفیر

ڈالی ڈالی جھول رہے ہیں دیکھو تو

پونم رات، اونچی پہاڑیاں اور چکور

کس کا رستہ دیکھ رہے ہیں دیکھو تو

دُھول نہائے تھکن سمیٹے کُل سپنے

سورج بن کر جاگ پڑے ہیں دیکھو تو

نرم نرم شاخوں پر ننھے ننھے پھول

کیسے تم کو دیکھ رہے ہیں دیکھو تو

گئی رتوں کی بارش میں بھیگے پنچھی

اُڑنے کو پل تول رہے ہیں دیکھو تو

اس باری تو چاند کے اُجلے ماتھے پر

ہم دونوں کے نام لکھے ہیں دیکھو تو

میں نے تمھاری قربت کی سرشاری میں

کیسے اچھے شعر لکھے ہیں دیکھو تو

افتخار عارف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(274) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Iftikhar Arif, Kaise Kaise Khawab Saje Hain Dekho Tu in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 108 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Iftikhar Arif.