Rakhat Guraiz Gaam Se Agay Ki Baat Hai

رخت گریز گام سے آگے کی بات ہے

رخت گریز گام سے آگے کی بات ہے

دنیا، فقط قیام سے آگے کی بات ہے

تو راستے بچھا نہ چراغوں سے لو تراش

یہ عشق اہتمام سے آگے کی بات ہے

ان پتھروں کے ساتھ کبھی رہ کے دیکھیے

یہ خامشی کلام سے آگے کی بات ہے

میں نے عدو کے خیمے میں بھیجا ہے اک چراغ

یہ عین انتقام سے آگے کی بات ہے

تو آب و گل سے جسم بنا، اسم مت سکھا

بابرؔ یہ تیرے کام سے آگے کی بات ہے

الیاس بابر اعوان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(470) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ilyas Babar Awan, Rakhat Guraiz Gaam Se Agay Ki Baat Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ilyas Babar Awan.