Kakal O Chashm O Lab O Rukhsar Ki Batain Karo

کاکل و چشم و لب و رخسار کی باتیں کرو

کاکل و چشم و لب و رخسار کی باتیں کرو

ظلمت دوراں میں حسن یار کی باتیں کرو

کون کیوں لے کر چلا آتا ہے ان کا قافلہ

آنسوؤں کے قافلۂ سالار کی باتیں کرو

کوئی چاہے یا نہ چاہے یہ سفر ہے ناگزیر

کاروان وقت کی رفتار کی باتیں کرو

خنجرو کچھ تو سر مقتل پہ ہوئے تبصرہ

آریو کاٹے گئے اشجار کی باتیں کرو

کیا نہیں ممکن کہ ہو حالات پہلے کی طرح

کیا ضروری ہے کہ تم پندار کی باتیں کرو

واعظو اب کے شراب عشق پر تقریر ہو

مے کشوں اللہ کے دیدار کی باتیں کرو

بے قراری کا سبب بننے لگی دانشوری

اب سکوں درکار ہے بے کار کی باتیں کرو

امتیاز خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(541) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Imtiyaz Khan, Kakal O Chashm O Lab O Rukhsar Ki Batain Karo in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 14 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Imtiyaz Khan.