Yeh Rang Berang Sare Manzar Hain Aik Jaise

یہ رنگ بے رنگ سارے منظر ہیں ایک جیسے

یہ رنگ بے رنگ سارے منظر ہیں ایک جیسے

یہ پھول سارے یہ سارے نشتر ہیں ایک جیسے

یہ اول اول تمام بکھرے ہوئے مناظر

نظر جما لو تو آخر آخر ہیں ایک جیسے

مری نگاہوں سے ہو کے جاتا ہے ان کا پانی

یہ سارے دریا سبھی سمندر ہیں ایک جیسے

میں کال جس کو ملاؤں جا کر ملے اسی کو

یہ کیا کہ دنیا کے سارے نمبر ہیں ایک جیسے

یہ مسکراہٹ کا ایک پردا سا گر ہٹا کر

کبیرؔ دیکھو تو سب کے اندر ہیں ایک جیسے

انعام کبیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(770) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Inam Kabeer, Yeh Rang Berang Sare Manzar Hain Aik Jaise in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 6 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Inam Kabeer.