Jalil Aali Poetry, Jalil Aali Shayari

جلیل عالی - Jalil Aali

1945 ایبٹ آباد

مشہور شاعر جلیل عالی کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

چلے تھے ایک تصویر دگر لے کر دلوں میں

جلیل عالی

کیا کیا دلوں کا خوف چھپانا پڑا ہمیں

جلیل عالی

غرور کوہ کے ہوتے نیاز کاہ رکھتے ہیں

جلیل عالی

عجب اسباب کرتا جا رہا ہوں

جلیل عالی

اک ہمیں سلسلہ شوق سنبھالے ہوئے ہیں

جلیل عالی

اک ایسی ان کہی تحریر کرنے جا رہا ہوں

جلیل عالی

اپنے ہونے سے بھی انکار کیے جاتے ہیں

جلیل عالی

شاخ بے نمو پر بھی عکس گل جواں رکھنا

جلیل عالی

ذرا سی بات پر صید غبار یاس ہونا

جلیل عالی

برگ بھر بار محبت کا اٹھایا کب تھا

جلیل عالی