Geet

گیت

پتے،یہ کیلے کے پتے

ان کو اوڑھوں ،ان کو پہنوں ٹاپو ٹاپو جاؤں

سبز سنہرے بالوں والی ہریالی پر

پون بجائے بنسی اور میں

ناچوں ،شور مچاؤں

پتے ،یہ کیلے کے پتے

یہ کیلے کے پتے جن میں چھپے ہین لاکھ جزیرے

جن کے امبر پر کھلتا ہےچندرا دھیرے دھیرے

جل کی ساری ٹھنڈک پی لیں

جل کا دوجا ناؤں

پتے ،یہ کیلے کے پتے

ان پتوں کو چھو کر مہکی تیرے تن کی نرمی

ان پتوں پر پھیل گئی ہےازل ابد کی گرمی

میں باندا تُو پیڑ پریم کا

انگ سے انگ ملاؤں

پتے

یہ کیلے کے پتے

سؤرگ کی میں تصویر بناؤں ان کا فرش بچھاؤں

جتنی عمر ہے باقی ان پرتیرے سنگ بتاؤں

امرت کےساگر کے تٹ پر

جوبن ترا چراؤں

پتے

یہ کیلے کے پتے!!!!!!!!!!!!

جمیل الرحمان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(441) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jameel Ur Rahman, Geet in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 68 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jameel Ur Rahman.