Maot Se Yaari Nah Thi Hasti Se Be Zaari Nah Thi

موت سے یاری نہ تھی ہستی سے بے زاری نہ تھی

موت سے یاری نہ تھی ہستی سے بے زاری نہ تھی

اس سفر پر چل دیئے ہم جس کی تیاری نہ تھی

ہم اسی کی خاک سے اٹھے ہیں کندن بن کے آج

دوستو جس شہر میں رسم وفاداری نہ تھی

ہم نے خون آرزو دے کر منقش کر دیا

ورنہ دیوار طلب پر ایسی گلکاری نہ تھی

مر گئے سر پھوڑ کے دیوار زنداں سے اسیر

زندگی کنج قفس میں موت سے پیاری نہ تھی

اب شکست آرزو ہے باعث تسکین دل

اس سے پہلے تو کبھی یہ کیفیت طاری نہ تھی

جل رہا ہے ہر نفس اب اپنے غم کی آنچ سے

سانس لینے میں کبھی محسنؔ یہ دشواری نہ تھی

محسن احسان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(377) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohsin Ehsan, Maot Se Yaari Nah Thi Hasti Se Be Zaari Nah Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 35 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohsin Ehsan.