Kabhi Aaise Mille Thay Kissi Anjaan Se Pehle

کبھی ایسے ملے کب تھے کسی انجان سے، پہلے

کبھی ایسے ملے کب تھے کسی انجان سے، پہلے

نہ کوئی دل کو بھایا ۔۔۔۔ آپ سے پہچان سے پہلے

مری تشنہ لبی کو دیکھ کر، حیران ہو کیوں تم؟

نہیں دیکھی زمیں پیاسی کبھی باران سے پہلے؟

کھلیں گی تم پہ رفتہ رفتہ میری حیرتیں ہمدم

ذرا مل جاؤ ، میرے دیدہء ِحیران سے، پہلے

تری الفت سے پیارا کچھ نہیں اب تو زمانے میں

محبت تھی مجھے بھی لو لو و مرجان سے، پہلے

نظر کس کی لگی ، دل کا اثاثہ چھن گیا سارا

بہت وافر محبت تھی تری ، فقدان سے پہلے

خدا کے نام سے ، ہر کام کا آغاز اچھا ہے

نہیں نقصان ہوتا پھر کسی فیضان سے پہلے

جنوں کس رہگزر پہ لے کے آیا ہے مجھے نسریںؔ

خرد بھی ہو گئی رخصت مری ، اوسان سے پہلے

نسرین سید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(553) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Syed, Kabhi Aaise Mille Thay Kissi Anjaan Se Pehle in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Syed.