Chandi Jaisi Jhilmil Machhli Pani Pighlay Neelam Sa

چاندی جیسی جھلمل مچھلی پانی پگھلے نیلم سا

چاندی جیسی جھلمل مچھلی پانی پگھلے نیلم سا

شاخیں جس پر جھکی ہوئی ہیں دریا بہتے سرگم سا

سورج روشن رستہ دے گا کالے گہرے جنگل میں

خوف اندھیری راتوں کا اب نقش ہوا ہے مدھم سا

درد نہ اٹھا کوئی دل میں لہو نہ ٹپکا آنکھوں سے

کہنے والا بجھا بجھا تھا قصہ بھی تھا مبہم سا

ہنستی گاتی سب تصویریں ساکت اور مبہوت ہوئیں

لگتا ہے اب شہر ہی سارا ایک پرانے البم سا

سرد اکیلا بستر فکریؔ نیند پہاڑوں پار کھڑی

گرم ہوا کا جھونکا ڈھونڈوں جی سے گیلے موسم سا

پرکاش فکری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(593) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of PARKASH FIKRI, Chandi Jaisi Jhilmil Machhli Pani Pighlay Neelam Sa in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 26 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of PARKASH FIKRI.