بند کریں
شاعری شہناز نبی

نیا استعارہ

-

naya isteara


(228) ووٹ وصول ہوئے