Tamam Shehar Tha Jungle Say Eant Pathar Ka

تمام شہر تھا جنگل سا اینٹ پتھر کا

تمام شہر تھا جنگل سا اینٹ پتھر کا

غضب وہ دیکھ کے آیا ہوں باد صرصر کا

صدائیں چشمے ابلنے کی آ رہی ہیں مجھے

کسی نے توڑ دیا کیا سکوت پتھر کا

ملا ہے خاک نشینی سے یہ مقام مجھے

زمیں ہے تخت فلک تاج ہے مرے سر کا

مجھے تو کوئی بھی موسم اڑا نہیں سکتا

کہ میں تو رنگ ہوں اس کے ادھورے منظر کا

رواں کیا ہے مجھے کن بلندیوں کی طرف

کہ آسمان بھی لگتا ہے سایہ شہ پر کا

میں اپنا گھر تو جلا کے سفر پہ نکلا تھا

خیال دشت میں آیا فقط ترے در کا

سنائی دیتی نہیں ہے اب اپنی آہٹ بھی

رواں ہوا ہے ہر اک سمت شور اندر کا

جب آفتاب سا مجھ پر ہوا تھا روشن تو

مجھے ہے یاد وہ یخ بستہ دن دسمبر کا

ہوائے لمس میں اک آگ بھی تھی پوشیدہ

کہ تابناک ہوا جسم سنگ مرمر کا

زہے نصیب محمد کا نام لیوا ہوں

ہے لاکھ شکر خدائے بزرگ و برتر کا

رفیع رضا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1417) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rafi Raza, Tamam Shehar Tha Jungle Say Eant Pathar Ka in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 30 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rafi Raza.