Aseeb Zada Lashain

آسیب زدہ لاشیں

جنگلوں سے لکڑی کاٹ کر

تابوت بنائے جارھے ھیں۔

کیل ہتھوڑے سمیت دھڑا دھڑ بکنے لگے

سفید کپڑا کم پڑ گیا

تو سوچا گیا۔

آخری لباس کسی اور رنگ کا کیوں نہیں۔۔۔۔۔ ؟

کیونکہ

مردوں نے بھی کفن پہننے سے انکار کر کے

ھڑتال کر دی ھے۔

وہ بینر اٹھائے چپ سادھے

مسلسل احتجاج کر رھے ہیں۔

کہ

انھیں وقت سے پہلے کیوں صلیب پہ لٹکایا گیا۔۔۔۔؟

کیوں بھسم کیا گیا۔۔۔؟

ان کا کہنا ھے کہ

لاشوں کو برف خانوں میں رکھ دیا جائے۔

آخری رسومات اس وقت ادا کی جائیں۔

جب زندہ بھی مر جائیں۔

شہر میں شوروغوغا ھے۔

اور

لوگوں نے جلدی مرنے کا ارادہ کر لیا ھے

جہاز ساحلو ں پہ آ لگے ھیں۔

لاشوں کی ایکسپورٹ تیزی سے بڑھنے لگی

تو۔۔۔۔

زندہ مردوں کو رشک کی نگاہوں سے

دیکھتے ھوئے

اپنے جینے پہ شرمسار ھونے لگے

صفیہ حیات

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(436) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Safia Hayat, Aseeb Zada Lashain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 80 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Safia Hayat.