Aik Musalsal Azaab Kya Hai

ایک مسلسل عذاب کیا ہے

ایک مسلسل عذاب کیا ہے

یہ گناہ و ثواب کیا ہے

کون بیٹھا ہے میرے کاندھوں پر

نیکی اور بدی کا حساب کیا ہے

کہاں گئیں محبتیں دور مجنو ں کی

یہ نفرتوں کا نصاب کیا ہے

حسرت دید مچل کے پوچھے ہے

ان کو ہم سے حجاب کیا ہے

اک قیامت ہے اہل نظر کے لئے

انکے رخ پر نقاب کیا ہے

بچھڑ جانا ہی حرف آخر ہے

دل کو پھر اضطراب کیا ہے

بنجر آنکھوں کی ویرانی میں

اک سنہرا سا خواب کیا ہے

زہد و تقو ی اور پارسائی کے چکر میں

ساقی پوچھے ہے شراب کیا ہے

بندے سارے گر خدا کے ہیں

تو پھر یہ مفلس و نواب کیا ہے

امتحاں سے انعام تک زہرہ

بہشت و دوزخ کا سراب کیا ہے

ثناء نقوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(579) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sana Naqvi, Aik Musalsal Azaab Kya Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 1 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sana Naqvi.