Lamhon Ka Pathrao Hai Mujh Par Sadiyon Ki Yalghaar

لمحوں کا پتھراؤ ہے مجھ پر صدیوں کی یلغار

لمحوں کا پتھراؤ ہے مجھ پر صدیوں کی یلغار

میں گھر جلتا چھوڑ آیا ہوں دریا کے اس پار

کس کی روح تعاقب میں ہے سائے کے مانند

آتی ہے نزدیک سے اکثر خوشبو کی جھنکار

تیرے سامنے بیٹھا ہوں آنکھوں میں اشک لیے

میرے تیرے بیچ ہو جیسے شیشے کی دیوار

میرے باہر اتنی ہی مربوط ہے بے ربطی

میرے اندر کی دنیا ہے جتنی پر اسرار

بند آنکھوں میں کانپ رہے ہیں جگنو جگنو خواب

سر پر جھول رہی ہے کیسی نادیدہ تلوار

شبنم رومانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(844) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shabnam Romani, Lamhon Ka Pathrao Hai Mujh Par Sadiyon Ki Yalghaar in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shabnam Romani.