Kuchh Kam Nigah Log Meray Aas Pas HaiN

کچھ کم نگاہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

کچھ کم نگاہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

یعنی تباہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

وہ مِل گیا ہے جس کے لیے تھا میں در بدر

اب خواہ مخواہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

جی چاہتا ہے تجھ سے اکیلے میں بات ہو

اور بے پناہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

میں قہقہوں میں گوندھا ہوا ایک شخص ہوں

اور مثلِ آہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

محسوس کر رہا ہوں میں خود کو بہت بڑا

وہ بادشاہ لوگ مِرے آس پاس ہیں

شہباز اس نے آنکھ سے مجھ کو دیا پیام

عالم پناہ! لوگ مِرے آس پاس ہیں

شہباز نئر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1435) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahbaz Nayyar, Kuchh Kam Nigah Log Meray Aas Pas HaiN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 8 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahbaz Nayyar.