Tri Talash To Kya Teri Aas Bhi Nah Rahay

تری تلاش تو کیا تیری آس بھی نہ رہے

تری تلاش تو کیا تیری آس بھی نہ رہے

عجب نہیں کہ کسی دن یہ پیاس بھی نہ رہے

ہر ایک سمت خلا ہی خلا نظر آئیں

خرابۂ دل ویراں میں یاس بھی نہ رہے

غم فراق کی تلخی وہ دشت ہے کہ جہاں

کوئی قریب تو کیا آس پاس بھی نہ رہے

ترا خیال ہی پر تول کر اڑا لے جائے

کوئی امید شریک حواس بھی نہ رہے

تمام رنگ ہے خوشبو تمام خوشبو رنگ

گلوں سے رنگ اڑا لیں تو باس بھی نہ رہے

لٹا ہے قافلۂ آگہی دوراہے پر

زمانہ ساز تو کیا خود شناس بھی نہ رہے

کسی طریق سے شہزادؔ دل کو سمجھا لیں

نہ مسکرائے مگر یوں اداس بھی نہ رہے

شہزاد احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2103) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shahzad Ahmed, Tri Talash To Kya Teri Aas Bhi Nah Rahay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shahzad Ahmed.