Main Ne Bakhash Di Teri Kiyon Khata Tujhe Ilaam Hai

میں نے بخش دی تری کیوں خطا ، تجھے علم ہے؟

میں نے بخش دی تری کیوں خطا ، تجھے علم ہے ؟

تجھے دی ہے کتنی کڑی سزا ، تجھے علم ہے ؟

میں سمجھتا تھا تو ہے اپنے حسن سے بے خبر

تری اک ادا نے بتا دیا تجھے علم ہے

مجھے زندگی کے قریب لے گئی جستجو

مری جستجو بھلا کون تھا ، تجھے علم ہے ؟

میں نے دل کی بات کبھی نہ کی ترے سامنے

مجھے عمر بھر یہ گماں رہا ، تجھے علم ہے

وہ مری گلی جو مرے لیے ہوئی اجنبی

کبھی واں تھے سب مرے آشنا ، تجھے علم ہے ؟

مرا حال دیکھ کے پوچھنے لگا کیا ہوا

میں نے ہنس کے صرف یہی کہا ، تجھے علم ہے

کوئی بات ہے کہ کنارا کش ہوں جہان سے

کبھی محفلوں کی میں جان تھا ، تجھے علم ہے

تیمور حسن تیمور

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(651) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Taimur Hasan Taimur, Main Ne Bakhash Di Teri Kiyon Khata Tujhe Ilaam Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 42 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Taimur Hasan Taimur.